مواد فوراً دِکھائیں

مضامین کی فہرست فوراً دِکھائیں

 باب 20

قانا میں دوسرا معجزہ

قانا میں دوسرا معجزہ

مرقس 1:‏14،‏ 15 لُوقا 4:‏14،‏ 15 یوحنا 4:‏43-‏54

  • یسوع مسیح نے مُنادی کی کہ ”‏خدا کی بادشاہت نزدیک ہے“‏

  • شاہی افسر کے بیٹے کی شفایابی

سامریہ میں دو دن گزارنے کے بعد یسوع مسیح گلیل گئے۔‏ حالانکہ اُنہوں نے یہودیہ میں بہت مُنادی کی تھی لیکن وہ آرام کرنے کے اِرادے سے اپنے آبائی علاقے گلیل نہیں گئے۔‏ دراصل وہ وہاں اَور بھی بڑے پیمانے پر مُنادی کرنا چاہتے تھے۔‏ شاید یسوع مسیح کو توقع تھی کہ گلیل کے لوگ اُن کو قبول نہیں کریں گے کیونکہ اُنہوں نے کہا کہ ”‏اپنے علاقے میں نبی کی عزت نہیں کی جاتی۔‏“‏ (‏یوحنا 4:‏44‏)‏ جب وہ گلیل پہنچے تو یسوع کے شاگرد اپنے اپنے گھروں کو چلے گئے اور دوبارہ سے اپنے پیشوں میں لگ گئے۔‏

یسوع مسیح نے کس پیغام کی مُنادی کی؟‏ اُنہوں نے لوگوں سے کہا:‏ ”‏خدا کی بادشاہت نزدیک ہے۔‏ توبہ کرو اور خوش‌خبری پر ایمان لاؤ۔‏“‏ (‏مرقس 1:‏15‏)‏ اِس پر لوگوں کا ردِعمل کیا تھا؟‏ بہت سے گلیلیوں نے یسوع مسیح کو قبول کِیا اور اُن کی عزت کی۔‏ مگر یہ صرف اُس پیغام کی وجہ سے نہیں تھا جو یسوع سنا رہے تھے۔‏ دراصل کچھ مہینے پہلے گلیل کے کئی یہودی بھی عیدِفسح کے موقعے پر یروشلیم گئے تھے اور وہاں اُنہوں نے اُن معجزوں کو دیکھا تھا جو یسوع مسیح نے کیے تھے۔‏—‏یوحنا 2:‏23‏۔‏

لگتا ہے کہ یسوع مسیح نے گلیل میں اپنا دورِخدمت قانا سے شروع کِیا جہاں پر اُنہوں نے اپنا سب سے پہلا معجزہ کِیا تھا اور پانی کو مے میں بدل دیا تھا۔‏ اب جب یسوع مسیح دوبارہ سے قانا میں تھے تو اُنہیں ایک لڑکے کے بارے میں پتہ چلا جو بہت بیمار تھا،‏ یہاں تک کہ مرنے والا تھا۔‏ یہ لڑکا بادشاہ ہیرودیس انتپاس کے ایک افسر کا بیٹا تھا۔‏ یہ وہی بادشاہ تھا جس نے بعد میں یوحنا بپتسمہ دینے والے کا سر کٹوا دیا۔‏ جب شاہی افسر کو پتہ چلا کہ یسوع مسیح یہودیہ سے قانا آئے ہیں تو وہ اُن سے ملنے کے لیے اپنے شہر کفرنحوم سے قانا آیا۔‏ اِس آدمی نے یسوع مسیح سے یہ اِلتجا کی کہ ”‏مالک،‏ میرے گھر آئیں۔‏ ایسا نہ ہو کہ میرا بچہ مر جائے۔‏“‏—‏یوحنا 4:‏49‏۔‏

اِس پر یسوع مسیح نے ایک ایسی بات کہی جسے سُن کر افسر ضرور حیران ہو گیا ہوگا۔‏ اُنہوں نے کہا:‏ ”‏جائیں،‏ آپ کا بیٹا زندہ رہے گا۔‏“‏ (‏یوحنا 4:‏50‏)‏ شاہی افسر نے یسوع مسیح کی بات پر یقین کر لیا اور اپنے گھر روانہ ہو گیا۔‏ ابھی وہ راستے میں ہی تھا کہ اُس کے غلام بھاگے بھاگے اُس کے پاس آئے اور اُسے یہ خوش‌خبری دی کہ اُس کا بیٹا ٹھیک ہو گیا ہے۔‏ افسر نے اُن سے پوچھا:‏ ”‏میرے بیٹے کی طبیعت کب بہتر ہونے لگی؟‏“‏

غلاموں نے جواب دیا:‏ ”‏اُس کا بخار کل ساتویں گھنٹے اُترا۔‏“‏—‏یوحنا 4:‏52‏۔‏

افسر کو یاد آیا کہ ٹھیک اُسی وقت یسوع مسیح نے اُس سے کہا تھا کہ ”‏آپ کا بیٹا زندہ رہے گا۔‏“‏ اِس کے بعد یہ امیر آدمی اور اِس کے تمام گھر والے یسوع مسیح پر ایمان لے آئے۔‏

یسوع مسیح نے قانا میں دو معجزے کیے۔‏ کچھ عرصہ پہلے اُنہوں نے پانی کو مے میں بدل دیا تھا اور اِس موقعے پر اُنہوں نے ایک لڑکے کو شفا دی جو 26 کلومیٹر (‏16 میل)‏ دُور ایک اَور شہر میں تھا۔‏ یوں تو یسوع مسیح نے اُس وقت تک اَور بھی بہت سے معجزے کیے تھے لیکن اِس لڑکے کی شفایابی اِس لیے اہم تھی کیونکہ اِس سے ظاہر ہو گیا کہ اب گلیل میں یسوع کے دورِخدمت کا آغاز ہو گیا ہے۔‏ اِس سے یہ بھی ظاہر ہو گیا کہ وہ واقعی خدا کے نبی ہیں۔‏ لیکن سوال یہ تھا کہ کیا یسوع مسیح کو ”‏اپنے علاقے میں نبی کی عزت“‏ ملے گی یا نہیں؟‏

یہ اُس وقت پتہ چلا جب یسوع اپنے آبائی شہر ناصرت گئے۔‏ آئیں،‏ دیکھیں کہ وہاں کیا ہوا۔‏