مواد فوراً دِکھائیں

کیا ہمیں کبھی مصیبتوں سے چھٹکا‌را ملے گا؟‏

کیا ہمیں کبھی مصیبتوں سے چھٹکا‌را ملے گا؟‏

آپ کیا جواب دیں گے؟‏

  • ہاں۔‏

  • نہیں۔‏

  • شاید۔‏

 پاک کلام کا جواب

‏”‏خدا .‏ .‏ .‏ اُن کی آنکھوں کے سب آنسو پونچھ دے گا۔‏ اِس کے بعد نہ موت رہے گی اور نہ ماتم رہے گا۔‏ نہ آہ‌ونالہ نہ درد۔‏“‏—‏مکا‌شفہ 21:‏3،‏ 4‏،‏ ریوائزڈ ورشن کا ترجمہ۔‏

اِس جواب کا آپ کی زندگی پر اثر

آپ سمجھ جائیں گے کہ خدا ہم پر مصیبتیں نہیں لاتا۔‏—‏یعقوب 1:‏13‏۔‏

آپ کو یہ جان کر تسلی ملے گی کہ خدا ہمارے دُکھ اور تکلیف کو سمجھتا ہے۔‏—‏زکریاہ 2:‏8‏۔‏

آپ کو یہ اُمید ملے گی کہ ایک دن ساری مصیبتیں ختم ہو جائیں گی۔‏—‏زبور 37:‏9-‏11‏۔‏

 آپ پاک کلام کے جواب پر یقین کیوں رکھ سکتے ہیں؟‏

اِس کی کم سے کم دو وجوہات ہیں:‏

  • خدا کو تشدد اور ناانصافی سے نفرت ہے۔‏ پُرانے زمانے میں جب یہوواہ خدا کے خادموں کے ساتھ بُرا سلوک کیا گیا تو خدا کو بہت دُکھ ہوا۔‏ اِس لئے خدا نے اُن کو ”‏ستانے والوں اور دُکھ دینے والوں“‏ کے ہاتھ سے چھڑایا۔‏—‏قضاة 2:‏18‏۔‏

    خدا کو ایسے لوگوں سے گھن ہے جو دوسروں کو نقصان پہنچاتے ہیں۔‏ پاک کلام میں لکھا ہے کہ خدا کو ’‏بےگُناہ کا خون بہانے والے ہاتھوں‘‏ سے سخت نفرت ہے۔‏—‏امثال 6:‏16،‏ 17‏۔‏

  • خدا ہر ایک کے دُکھ کو سمجھتا ہے۔‏ سچ ہے کہ ”‏ہر شخص اپنے دُکھ اور رنج“‏ کو جانتا ہے لیکن تسلی کی بات یہ ہے کہ خدا بھی اِس سے واقف ہے۔‏—‏2-‏تواریخ 6:‏29،‏ 30‏۔‏

    خدا بہت جلد اپنی بادشاہت کے ذریعے ہر شخص کے دُکھ اور تکلیف کو دُور کر دے گا۔‏ (‏متی 6:‏9،‏ 10‏)‏ لیکن وہ ابھی بھی اُن سب لوگوں کو تسلی دیتا ہے جو اُس کی قربت میں آنا چاہتے ہیں۔‏—‏اعمال 17:‏27؛‏ 2-‏کرنتھیوں 1:‏3،‏ 4‏۔‏

 کیا آپ جاننا چاہتے ہیں کہ .‏ .‏ .‏

خدا نے ابھی تک اِنسانوں کو مصیبتوں سے چھٹکا‌را کیوں نہیں دِلایا؟‏

جواب کے لئے اِن آیتوں کو دیکھیں:‏ رومیوں 5:‏12 اور 2-‏پطرس 3:‏9‏۔‏