مواد فوراً دِکھائیں

مضامین کی فہرست فوراً دِکھائیں

 کیا یہ خالق کی کاریگری ہے؟‏

مگرمچھ کا جبڑا

مگرمچھ کا جبڑا

مگرمچھ کا جبڑا باقی تمام جانوروں کے جبڑوں سے زیادہ طاقت‌ور ہے۔‏ مثال کے طور پر آسٹریلیا کے کھارے پانی میں رہنے والا مگرمچھ،‏ شیر سے تین گُنا زیادہ زور سے کاٹ سکتا ہے۔‏ لیکن اِس کے ساتھ ساتھ مگرمچھ کا جبڑا بہت حساس بھی ہے،‏ ہماری اُنگلی کے پوٹے سے بھی زیادہ حساس۔‏ مگر یہ کیسے ہو سکتا ہے جبکہ مگرمچھ کی جِلد اِتنی موٹی اور سخت ہوتی ہے؟‏

مگرمچھ کے جبڑے میں ہزاروں اعصابی ریشے ہوتے ہیں جو بہت ہی حساس ہوتے ہیں۔‏ تحقیق‌دان ڈنکن لیچ نے اِن پر تحقیق کرنے کے بعد لکھا:‏ ”‏مگرمچھ کے جبڑے میں موجود تمام اعصابی ریشے کھوپڑی میں ایک ہی سوراخ سے نکلتے ہیں۔‏“‏ اِس طرح جبڑے کے اعصابی ریشے محفوظ رہتے ہیں اور جبڑے کو اِس قدر حساس بنا دیتے ہیں کہ سائنس‌دان آلات کے ذریعے بھی اِس کا اندازہ نہیں لگا سکتے۔‏ اِس وجہ سے مگرمچھ جان لیتا ہے کہ اُس کے مُنہ میں خوراک ہے یا گند۔‏ اور اِسی وجہ سے مادہ مگرمچھ اپنے بچوں کو کچلے بغیر اپنے مُنہ میں لے سکتی ہے۔‏ واقعی مگرمچھ کا جبڑا بہت ہی طاقت‌ور ہونے کے ساتھ ساتھ نہایت حساس بھی ہے۔‏

آپ کا کیا خیال ہے؟‏ کیا مگرمچھ کا جبڑا خودبخود وجود میں آیا ہے؟‏ یا کیا یہ خالق کی کاریگری ہے؟‏