مواد فوراً دِکھائیں

مضامین کی فہرست فوراً دِکھائیں

‏”‏خدا کہاں تھا؟‏“‏

‏”‏خدا کہاں تھا؟‏“‏

‏”‏اکثر میرے ذہن میں یہ سوال اُٹھتا ہے کہ خدا کہاں تھا؟‏“‏‏—‏یہ بات پوپ بینیڈکٹ نے پولینڈ کے ایک سابقہ قیدی کیمپ آؤشوِٹس کا دورہ کرتے ہوئے کہی۔‏

جب کوئی آفت آتی ہے تو کیا آپ بھی یہ سوچتے ہیں کہ ”‏خدا کہاں تھا؟‏“‏ یا کیا آپ کی زندگی میں کچھ ایسا ہوا ہے جس کی وجہ سے آپ کے ذہن میں یہ سوال پیدا ہو گیا ہے کہ ”‏کیا خدا کو میری فکر ہے؟‏“‏

شاید آپ شیلا کی طرح محسوس کرتے ہوں جو ریاستہائے متحدہ امریکہ میں رہتی ہیں۔‏ اُن کی پرورش ایک بڑے مذہبی گھرانے میں ہوئی۔‏ وہ کہتی ہیں:‏ ”‏بچپن سے ہی مجھے خدا سے بڑا لگاؤ تھا کیونکہ وہ ہمارا خالق ہے۔‏ لیکن مَیں نے خود کو کبھی خدا کے قریب محسوس نہیں کِیا تھا۔‏ مَیں سوچتی تھی کہ وہ مجھے دیکھ رہا ہے لیکن بس ایک فاصلے سے۔‏ مجھے یہ نہیں لگتا تھا کہ خدا مجھ سے نفرت کرتا ہے لیکن مجھے کبھی یہ یقین بھی نہیں ہوا کہ اُسے میری فکر ہے۔‏“‏ شیلا کے دل میں یہ شک کیوں تھا؟‏ اُنہوں نے اِس سوال کا جواب یوں دیا:‏ ”‏میرے گھر والوں پر ایک کے بعد ایک مصیبت آئی اور ایسا لگتا تھا کہ خدا ہماری کوئی مدد نہیں کر رہا۔‏“‏

ہو سکتا ہے کہ شیلا کی طرح آپ کو بھی یقین ہو کہ لامحدود قدرت کا مالک خدا موجود ہے۔‏ مگر شاید آپ کے ذہن میں بھی یہ سوال اُٹھتا ہو کہ ”‏کیا خدا کو میری فکر ہے؟‏“‏ ایوب خدا کے وفادار بندے تھے اور وہ اپنے خالق کی طاقت اور دانش‌مندی پر ایمان رکھتے تھے۔‏ لیکن پھر بھی اُن کے دل میں یہ شک پیدا ہوا کہ خدا اُن کی فکر کرتا ہے یا نہیں۔‏ (‏ایوب 2:‏3؛‏ 9:‏4‏)‏ جب ایوب پر مصیبتوں کا پہاڑ ٹوٹ پڑا اور اُنہیں اِن سے نکلنے کا کوئی راستہ نظر نہیں آیا تو اُنہوں نے خدا سے پوچھا:‏ ”‏تُو اپنا مُنہ کیوں چھپاتا ہے اور مجھے اپنا دشمن کیوں جانتا ہے؟‏“‏—‏ایوب 13:‏24‏۔‏

اِس سلسلے میں پاک کلام کی تعلیم کیا ہے؟‏ جب کوئی مصیبت آتی ہے تو کیا خدا اِس کا ذمےدار ہوتا ہے؟‏ کیا اِس بات کا کوئی ثبوت ہے کہ خدا کو تمام اِنسانوں بلکہ ہم میں سے ہر ایک کی فکر ہے؟‏ کیا ہم میں سے کوئی واقعی یہ جان سکتا ہے کہ آیا خدا ہمیں دیکھتا ہے یا نہیں،‏ ہمارے احساسات کو سمجھتا ہے یا نہیں،‏ ہم سے ہمدردی کرتا ہے یا نہیں اور مشکل وقت میں ہماری مدد کرتا ہے یا نہیں؟‏

اگلے مضامین میں ہم غور کریں گے کہ ہم خدا کی تخلیق سے یہ کیسے سیکھ سکتے ہیں کہ خدا کو ہماری فکر ہے۔‏ (‏رومیوں 1:‏20‏)‏ اِس کے بعد ہم یہ جائزہ لیں گے کہ پاک کلام میں اِس حوالے سے کیا بتایا گیا ہے۔‏ آپ خدا کی تخلیق اور اُس کے کلام کے ذریعے جتنا زیادہ اُس کے بارے میں ’‏جانیں‘‏ گے اُتنا زیادہ آپ کو اِس بات کا یقین ہوگا کہ ”‏اُس کو آپ کی فکر ہے۔‏“‏—‏1-‏یوحنا 2:‏3؛‏ 1-‏پطرس 5:‏7‏۔‏