مواد فوراً دِکھائیں

مضامین کی فہرست فوراً دِکھائیں

جب میاں بیوی مل کر کام کرتے ہیں تو یہ ایسے ہی ہے جیسے ایک جہاز کو پائلٹ اور ساتھی پائلٹ مل کر اُڑا رہے ہوں۔‏

 میاں بیوی کے لیے

2.‏ مل کر کام کریں

2.‏ مل کر کام کریں

اِس کا کیا مطلب ہے؟‏

جب میاں بیوی مل کر کام کرتے ہیں تو یہ ایسے ہی ہوتا ہے جیسے ایک جہاز کو پائلٹ اور ساتھی پائلٹ مل کر اُڑا رہے ہوں۔‏ وہ دونوں مشکلات میں بھی ”‏مَیں“‏ نہیں بلکہ ”‏ہم“‏ والی سوچ اپناتے ہیں۔‏

پاک کلام کا اصول:‏ ”‏وہ دو نہیں رہے بلکہ ایک ہو گئے ہیں۔‏“‏—‏متی 19:‏6‏۔‏

‏”‏شادی صرف ایک شخص کی کوششوں سے کامیاب نہیں ہوتی۔‏ اِسے کامیاب بنانے کے لیے میاں اور بیوی دونوں کو مل کر کام کرنا پڑتا ہے۔‏“‏—‏کرسٹوفر۔‏

یہ کیوں اہم ہے؟‏

جن میاں بیوی میں اِتفاق نہیں ہوتا،‏ وہ مسئلے کھڑے ہونے پر اِنہیں حل کرنے کی بجائے ایک دوسرے کو اِلزام دینے لگتے ہیں۔‏ یوں چھوٹے چھوٹے مسئلے بڑی بڑی رُکاوٹوں کا رُوپ دھار لیتے ہیں۔‏

‏”‏شادی‌شُدہ زندگی میں مل جُل کر کام کرنا بہت ضروری ہے۔‏ اگر میرے شوہر اور مَیں ایک ٹیم نہ ہوں تو ہم شادی‌شُدہ جوڑے کی بجائے دو ایسے لوگوں کی طرح ہوں گے جو رہتے تو ایک جگہ ہیں لیکن جب اہم فیصلے کرنے کی بات آتی ہے تو اُن کے راستے جُدا جُدا ہوتے ہیں۔‏“‏—‏الیگزینڈرا۔‏

آپ کیا کر سکتے ہیں؟‏

اپنا جائزہ لیں

  • کیا مَیں یہ سمجھتا ہوں کہ میری کمائی پر میرے جیون ساتھی کا کوئی حق نہیں ہے؟‏

  • کیا مجھے ذہنی سکون حاصل کرنے کے لیے اپنے جیون ساتھی سے دُور جانے کی ضرورت پڑتی ہے؟‏

  • کیا مَیں اپنے جیون ساتھی کے رشتےداروں سے دُور دُور رہتا ہوں حالانکہ وہ اُن کے بہت قریب ہے؟‏

آپس میں اِن سوالوں پر بات‌چیت کریں:‏

  • ہم اپنی ازدواجی زندگی کے کن حلقوں میں ایک ٹیم کے طور پر کام کرتے ہیں؟‏

  • ہم ٹیم کے طور پر کام کرنے کے سلسلے میں کن حلقوں میں بہتری لا سکتے ہیں؟‏

  • ہم مل کر کام کرنے کے جذبے کو بڑھانے کے لیے کون سے اِقدام اُٹھا سکتے ہیں؟‏

کچھ مشورے:‏

  • تصور کریں کہ آپ ایک میچ کے دوران ایک دوسرے کے خلاف کھیل رہے ہیں۔‏ لیکن آپ کون سے اِقدام اُٹھا سکتے ہیں تاکہ آپ ایک دوسرے کے مخالف کھیلنے کی بجائے ایک ہی ٹیم میں کھیل سکیں؟‏

  • یہ سوچنے کی بجائے کہ ”‏مَیں کیسے جیت سکتا ہوں؟‏،‏“‏ یہ سوچیں کہ ”‏ہم دونوں کیسے جیت سکتے ہیں؟‏“‏

‏”‏یہ نہ سوچیں کہ کون صحیح ہے اور کون غلط۔‏ یہ اِتنا اہم نہیں ہے جتنا یہ کہ آپ کی شادی‌شُدہ زندگی میں امن اور اِتحاد ہو۔‏“‏—‏ایتان۔‏

پاک کلام کا اصول:‏ ”‏صرف اپنے فائدے کا ہی نہیں بلکہ دوسروں کے فائدے کا بھی سوچیں۔‏“‏—‏فِلپّیوں 2:‏3،‏ 4‏۔‏