یوحنا 20‏:1‏-‏31

  • خالی قبر (‏1-‏10‏)‏

  • یسوع،‏ مریم مگدلینی کو دِکھائی دیتے ہیں (‏11-‏18‏)‏

  • یسوع شاگردوں کو دِکھائی دیتے ہیں (‏19-‏23‏)‏

  • توما شک کرتے ہیں (‏24-‏29‏)‏

  • اِس کتاب کا مقصد (‏30،‏ 31‏)‏

20  ہفتے کے پہلے دن صبح سویرے جب ابھی اندھیرا ہی تھا،‏ مریم مگدلینی قبر پر آئیں۔‏ اُنہوں نے دیکھا کہ جو پتھر قبر کے مُنہ پر رکھا تھا،‏ وہ پہلے ہی ہٹا ہوا ہے۔‏ 2  وہ بھاگی بھاگی شمعون پطرس اور اُس شاگرد کے پاس گئیں جو یسوع کو بہت عزیز تھا اور اُن سے کہا:‏ ”‏وہ مالک کو قبر سے لے گئے ہیں اور ہمیں نہیں پتہ کہ اُن کو کہاں رکھا گیا ہے۔‏“‏ 3  یہ سُن کر پطرس اور وہ شاگرد قبر پر جانے کے لیے روانہ ہوئے۔‏ 4  وہ دونوں بھاگنے لگے لیکن دوسرا شاگرد پطرس سے زیادہ تیز دوڑا اِس لیے وہ پہلے قبر پر پہنچ گیا۔‏ 5  جب اُس نے جھک کر اندر دیکھا تو وہاں لینن کی پٹیاں پڑی تھیں لیکن وہ اندر نہیں گیا۔‏ 6  پھر شمعون پطرس بھی اُس کے پیچھے پیچھے قبر پر پہنچ گئے۔‏ پطرس اندر چلے گئے اور دیکھا کہ وہاں لینن کی پٹیاں پڑی ہیں۔‏ 7  اور جو کپڑا یسوع کے سر پر لپیٹا گیا تھا،‏ وہ پٹیوں کے پاس نہیں تھا بلکہ اُسے تہہ کر کے ایک طرف رکھا گیا تھا۔‏ 8  تب وہ شاگرد بھی جو پہلے قبر پر پہنچا تھا،‏ اندر گیا۔‏ جب اُس نے سب کچھ دیکھا تو اُسے یقین آ گیا۔‏ 9  دراصل وہ دونوں ابھی تک اِس صحیفے کو نہیں سمجھے تھے کہ وہ مُردوں میں سے زندہ ہوگا۔‏ 10  پھر وہ شاگرد اپنے اپنے گھر چلے گئے۔‏ 11  لیکن مریم قبر کے سامنے کھڑی رو رہی تھیں اور روتے روتے اُنہوں نے جھک کر اندر دیکھا۔‏ 12  وہاں اُن کو دو فرشتے دِکھائی دیے جنہوں نے سفید کپڑے پہنے تھے۔‏ وہ اُس جگہ بیٹھے تھے جہاں یسوع کی لاش کو رکھا گیا تھا،‏ ایک سر کی طرف اور ایک پاؤں کی طرف۔‏ 13  اُنہوں نے مریم سے کہا:‏ ”‏بی‌بی،‏ آپ کیوں رو رہی ہیں؟‏“‏ مریم نے کہا:‏ ”‏وہ میرے مالک کو لے گئے ہیں اور مجھے نہیں پتہ کہ اب اُن کو کہاں رکھا گیا ہے۔‏“‏ 14  یہ کہہ کر مریم نے مُڑ کر دیکھا۔‏ وہاں یسوع کھڑے تھے لیکن وہ اُن کو پہچان نہ پائیں۔‏ 15  یسوع نے اُن سے کہا:‏ ”‏بی‌بی،‏ آپ کیوں رو رہی ہیں؟‏ آپ کس کو ڈھونڈ رہی ہیں؟‏“‏ مریم کو لگا کہ وہ مالی ہیں اِس لیے اُنہوں نے کہا:‏ ”‏بھائی،‏ اگر آپ نے اُن کی لاش کو کہیں رکھا ہے تو بتائیں کہ کہاں رکھا ہے تاکہ مَیں اِسے لے جاؤں۔‏“‏ 16  یسوع نے اُن سے کہا:‏ ”‏مریم!‏“‏ اِس پر مریم مُڑیں اور عبرانی میں کہا:‏ ”‏ربونی!‏“‏ (‏جس کا مطلب ہے:‏ اُستاد۔‏)‏ 17  یسوع نے اُن سے کہا:‏ ”‏مجھے پکڑ کر نہ رکھیں۔‏ ابھی تو مَیں باپ کے پاس نہیں گیا۔‏ لیکن میرے بھائیوں کے پاس جائیں اور اُنہیں بتائیں کہ ”‏مَیں اپنے اور آپ کے باپ اور اپنے اور آپ کے خدا کے پاس جا رہا ہوں۔‏“‏ “‏ 18  مریم مگدلینی نے جا کر شاگردوں کو خبر دی کہ ”‏مَیں نے مالک کو دیکھا ہے۔‏“‏ اُنہوں نے یہ بھی بتایا کہ یسوع نے اُن سے کیا کہا تھا۔‏ 19  ہفتے کے پہلے دن شام کے وقت شاگرد ایک گھر میں بیٹھے تھے اور اُنہوں نے یہودیوں کے ڈر سے دروازوں پر تالا لگایا ہوا تھا۔‏ اچانک یسوع آ کر اُن کے بیچ میں کھڑے ہو گئے اور کہنے لگے:‏ ”‏آپ پر سلامتی ہو۔‏“‏ 20  یہ کہہ کر اُنہوں نے شاگردوں کو اپنے ہاتھ اور اپنی پسلیاں دِکھائیں۔‏ شاگرد اپنے مالک کو دیکھ کر بہت خوش ہوئے۔‏ 21  یسوع نے اُن سے دوبارہ کہا:‏ ”‏آپ پر سلامتی ہو۔‏ جس طرح باپ نے مجھے بھیجا ہے،‏ مَیں بھی آپ کو بھیج رہا ہوں۔‏“‏ 22  یہ کہہ کر یسوع نے اُن پر پھونک ماری اور کہا:‏ ”‏پاک روح پائیں۔‏ 23  اگر آپ کسی کے گُناہ معاف کریں گے تو وہ معاف ہو گئے اور اگر آپ کسی کے گُناہ معاف نہیں کریں گے تو وہ معاف نہیں ہوئے۔‏“‏ 24  لیکن توما جو 12 رسولوں میں سے ایک تھے اور جنہیں جُڑواں کہا جاتا تھا،‏ وہ اُس وقت وہاں نہیں تھے جب یسوع آئے تھے۔‏ 25  باقی شاگردوں نے اُن کو بتایا کہ ”‏ہم نے مالک کو دیکھا ہے۔‏“‏ لیکن اُنہوں نے کہا:‏ ”‏جب تک مَیں اُن کے ہاتھوں میں کیلوں کے زخم* نہیں دیکھوں گا اور اِن میں اُنگلی نہیں ڈالوں گا اور اُن کی پسلیوں میں ہاتھ نہیں ڈالوں گا تب تک مَیں تمہاری بات کا ہرگز یقین نہیں کروں گا۔‏“‏ 26  اِس کے آٹھ دن بعد شاگرد پھر سے ایک گھر میں تھے اور توما بھی اُن کے ساتھ تھے۔‏ حالانکہ دروازوں کو تالا لگا ہوا تھا پھر بھی یسوع اندر آ گئے اور اُن کے بیچ میں کھڑے ہو کر کہا:‏ ”‏آپ پر سلامتی ہو۔‏“‏ 27  اِس کے بعد اُنہوں نے توما سے کہا:‏ ”‏میرے ہاتھوں کو دیکھیں اور اِن میں اُنگلی ڈالیں اور میری پسلیوں میں اپنا ہاتھ ڈالیں اور شک نہ کریں بلکہ یقین کریں۔‏“‏ 28  توما نے اُن سے کہا:‏ ”‏میرے مالک اور میرے خدا!‏“‏ 29  یسوع نے اُن سے کہا:‏ ”‏کیا مجھے دیکھ کر آپ کو یقین آ گیا ہے؟‏ وہ لوگ خوش رہتے ہیں جو دیکھے بغیر یقین کرتے ہیں۔‏“‏ 30  بِلاشُبہ یسوع نے شاگردوں کے سامنے اَور بھی بہت سے معجزے کیے جو اِس کتاب* میں نہیں لکھے۔‏ 31  لیکن جو معجزے لکھے ہیں،‏ وہ اِس لیے لکھے ہیں تاکہ آپ یقین کر لیں کہ یسوع،‏ خدا کے بیٹے اور مسیح ہیں اور اِس یقین کی وجہ سے آپ کو اُن کے نام کے ذریعے زندگی ملے۔‏

فٹ‌ نوٹس

یا ”‏نشان“‏
یا ”‏طومار“‏