مواد فوراً دِکھائیں

مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے حوالے سے ہدایات

مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے حوالے سے ہدایات

فہرست

 

پیراگراف

اِبتدائی کلمات

 2

پاک کلام سے سنہری باتیں

 3

شاگرد بنانے کی تربیت

 4

مسیحیوں کے طور پر زندگی

 5

اِختتامی کلمات

 6

تعلیم دینے اور تلاوت کرنے میں لگے رہیں

 7

مشورہ

 8

وقت

 9

حلقے کے نگہبان کا دورہ

 10

حلقے کے اِجتماع یا علاقائی اِجتماع والا ہفتہ

 11

مسیح کی موت کی یادگاری تقریب والا ہفتہ

 12

مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا نگہبان

 13

مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا چیئرمین

 14

بزرگوں کی جماعت کا منتظم

 15

اِمدادی مشیر

 16

اِضافی جماعتیں

 17

ویڈیوز

 18

1.‏ مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کو ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت—‏اِجلاس کا قاعدہ“‏ میں درج ہدایات اور آگے دی جانے والی ہدایات کے مطابق منعقد کِیا جائے گا۔‏ تمام مبشروں کو طالبِ‌علموں کے حصے پیش کرنے کے لیے دستیاب رہنے کی دعوت دینی چاہیے۔‏ کلیسیا کے ساتھ رفاقت رکھنے والے دوسرے لوگ بھی یہ حصے پیش کر سکتے ہیں بشرطیکہ وہ بائبل کی تعلیمات سے متفق ہیں اور مسیحی اصولوں کے مطابق زندگی گزارتے ہیں۔‏‏—‏بی‌ای ص.‏ 282۔‏

 2.‏ اِبتدائی کلمات:‏ 3 منٹ یا اِس سے کم۔‏ ہر ہفتے اِبتدائی گیت اور دُعا کے بعد مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا چیئرمین اُس دن کے پروگرام کے لیے جوش‌وخروش پیدا کرنے کے ساتھ ساتھ ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے لیے جوابی پرچہ“‏ سے سوال پر توجہ دِلائے گا۔‏

 3.‏ پاک کلام سے سنہری باتیں:‏

  • تقریر:‏ 10 منٹ۔‏ ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت—‏اِجلاس کا قاعدہ“‏ میں موضوع اور دو یا تین بنیادی نکات پر مشتمل ایک خاکہ فراہم کِیا جاتا ہے۔‏ یہ تقریر ایک بزرگ یا کسی لائق خادم کو تفویض کی جائے گی۔‏ جب ہفتہ‌وار بائبل پڑھائی کے سلسلے میں بائبل کی کسی نئی کتاب کو پروگرام میں شامل کِیا جاتا ہے تو کتاب کو متعارف کرانے کے لیے ایک ویڈیو چلائی جائے گی۔‏ مقرر موضوع اور ویڈیو کے درمیان موازنہ اِستعمال کر سکتا ہے۔‏ تاہم،‏  اُسے قاعدے میں پیش کیے جانے والے نکات پر ضرور بات کرنی چاہیے۔‏ اِس کے علاوہ اگر وقت اِجازت دے تو اُسے قاعدے سے کو زیادہ معلوماتی بنانے کے لیے دی جانے والی تصاویر کو بھی ضرور اِستعمال کرنا چاہیے۔‏

  • سنہری باتوں کی تلاش:‏ 8 منٹ۔‏ یہ تعارف یا اِختتام کے بغیر سوالوں اور جوابوں والا حصہ ہے۔‏ اِس حصے کو ایک بزرگ یا کوئی لائق خادم پیش کرے گا۔‏ مقرر مقامی کلیسیا کی ضروریات کے مطابق چاروں نکات کا اِطلاق کرنے کے لیے وقت کو تقسیم کر سکتا ہے۔‏ تاہم اُسے سامعین سے تمام سوال پوچھنے چاہئیں۔‏ اِس کے علاوہ وہ فیصلہ کر سکتا ہے کہ آیا پہلے دو سوالوں میں دی گئی تمام آیات کو پڑھنے کی ضرورت ہے یا نہیں۔‏ جن بہن بھائیوں سے تبصرہ کرنے کے لیے کہا جاتا ہے،‏ اُنہیں 30 سیکنڈ یا اِس سے کم وقت لینا چاہیے۔‏

  • تلاوت:‏ 4 منٹ یا اِس سے کم۔‏ طالبِ‌علموں کے لیے ترتیب دیے گئے اِس حصے کو ایک بھائی پیش کرے گا۔‏ طالبِ‌علم کو کسی تعارفی یا اِختتامی بیان کے بغیر دیے گئے مواد کی پڑھائی کرنی چاہیے۔‏ اِجلاس کے چیئرمین کی دلچسپی خاص طور پر اِس بات میں ہوگی کہ وہ طالبِ‌علموں کی درستی،‏ سمجھ‌داری،‏ روانی،‏ مفہوم پر صحیح زور دینے اور اُتارچڑھاؤ کے ساتھ موزوں وقفے اور قدرتی انداز میں پڑھائی کرنے میں مدد دے۔‏

  4.‏ شاگرد بنانے کی تربیت:‏ 15 منٹ یا اِس سے کم۔‏ اِجلاس کا یہ حصہ سب کو خدمت‌گزاری اور مُنادی کرنے اور تعلیم دینے کی اپنی صلاحیت کو بہتر بنانے کی مشق کرنے کا موقع فراہم کرنے کے لیے ترتیب دیا گیا ہے۔‏ طالبِ‌علموں کو پہلی ملاقات اور واپسی ملاقات کے حصوں کو ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت—‏اِجلاس کا قاعدہ“‏ کے صفحہ 1 پر فراہم کی جانے والی بات‌چیت کے لیے تجاویز پر مبنی ہونا چاہیے۔‏ مبشر یہ فیصلہ کر سکتے ہیں کہ آیا وہ تعلیم دینے کے اوزاروں سے کوئی کتاب یا ویڈیو متعارف کرائیں گے یا نہیں۔‏ ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت—‏اِجلاس کا قاعدہ“‏ ہر طالبِ‌علم کے حصے کے لیے وقت کا تعیّن کرتا ہے اور بعض اوقات شاید اِضافی ہدایات بھی فراہم کرے۔‏ طالبِ‌علموں کو مختص کیے جانے والے تمام وقت کو اِستعمال کرنے کے لیے اِضافی معلومات شامل کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔‏ کچھ اچھی طرح سے تیار منظر ایک یا دو منٹ پہلے ختم کیے جا سکتے ہیں۔‏ اگر ضروری ہو تو بزرگوں کو بھی طالبِ‌علموں والے حصے تفویض کیے جا سکتے ہیں۔‏

  • بات‌چیت کے لیے تجاویز کی ویڈیوز:‏ ہر مہینے ہفتوں کے دوران متواتر بات‌چیت کے لیے تجاویز کی ویڈیوز چلانے کے بعد اُن پر بات‌چیت کی جائے گی۔‏ اِن ویڈیوز میں پہلی ملاقات،‏ پہلی واپسی ملاقات اور دوسری واپسی ملاقات کے مناظر پیش کیے جائیں گے۔‏ اِس حصے کو ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت—‏اِجلاس کا قاعدہ“‏ کا چیئرمین پیش کرے گا۔‏

  • پہلی ملاقات:‏ طالبِ‌علموں کے لیے یہ حصہ کوئی بھائی یا بہن پیش کر سکتی ہے۔‏ طالبِ‌علم کا ساتھ دینے والے مددگار کو اِس کا ہم جنس ہی ہونا چاہئے یا اُس کے خاندان کے کسی فرد کو ہونا چاہیے۔‏ طالبِ‌علم اور ساتھ دینے والا مددگار بیٹھ سکتے یا کھڑے رہ سکتے ہیں۔‏ طالبِ‌علم کو علاقے کی مناسبت سے سلام وغیرہ کا اِنتخاب کرنا چاہیے۔‏ بات‌چیت کے لیے تجاویز کو بات‌چیت کی بنیاد کے طور پر اِستعمال کرنا چاہیے۔‏

  • پہلی واپسی ملاقات:‏ طالبِ‌علموں کے لیے یہ حصہ کوئی بھائی یا بہن پیش کر سکتی ہے۔‏ طالبِ‌علم کا ساتھ دینے والے مددگار کو کسی مخالف جنس سے نہیں ہونا چاہئے۔‏ (‏خدمتگزاری 97/‏5 ص.‏ 1‏)‏ طالبِ‌علم اور ساتھ دینے والا مددگار بیٹھ سکتے یا کھڑے رہ سکتے ہیں۔‏ طالبِ‌علم کو منظر پیش کرنا چاہیے کہ پہلی ملاقات پر دلچسپی دِکھانے والے شخص سے واپسی ملاقات کرتے وقت کیا کہا جائے۔‏ بات‌چیت کی بنیاد کے لیے ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت—‏اِجلاس کا قاعدہ“‏ سے بات‌چیت کے لیے تجاویز کو بات‌چیت کی بنیاد کے طور پر اِستعمال کرنا چاہیے۔‏

  • دوسری واپسی ملاقات:‏ طالبِ‌علموں کے لیے یہ حصہ کوئی بھائی یا بہن پیش کر سکتی ہے۔‏ طالبِ‌علم کا ساتھ دینے والے مددگار کو کسی مخالف جنس سے نہیں ہونا چاہئے۔‏ (‏خدمتگزاری 97/‏5 ص.‏ 1‏)‏ طالبِ‌علم اور ساتھ دینے والا مددگار بیٹھ سکتے یا کھڑے رہ سکتے ہیں۔‏ طالبِ‌علم کو منظر پیش کرنا چاہیے کہ پہلی واپسی ملاقات پر دلچسپی دِکھانے والے شخص سے واپسی ملاقات کرتے وقت کیا کہا جائے۔‏ بات‌چیت کی بنیاد کے لیے بات‌چیت کے لیے تجاویز کا اِستعمال کرنا چاہیے۔‏

  • بائبل کورس:‏ طالبِ‌علموں کے لیے یہ حصہ کوئی بھائی یا بہن پیش کر سکتی ہے۔‏ طالبِ‌علم کا ساتھ دینے والے مددگار کو کسی مخالف جنس سے نہیں ہونا چاہئے۔‏ (‏خدمتگزاری 97/‏5 ص.‏ 1‏)‏ طالبِ‌علم اور ساتھ دینے والا مددگار بیٹھ سکتے یا کھڑے رہ سکتے ہیں۔‏ یہ حصہ پہلے سے جاری ایک بائبل کورس کے ایک منظر کے طور پر پیش کرنا چاہیے۔‏ اگر طالبِ‌علم تمہید یا اِختتام کے نکتے پر کام نہ کر رہا ہو تو کسی تمہیدی یا اِختتامی بیان کی ضرورت نہیں ہے۔‏ یہ ضروری نہیں ہے کہ تمام مواد کو باآواز بلند پڑھا جائے اگرچہ ایسا کر سکتے ہیں۔‏ تعلیم دینے کی اچھی مہارتوں کو نمایاں کرنا چاہیے۔‏

  • تقریر:‏ طالبِ‌علموں کے لیے اِس حصے کو ایک بھائی کلیسیا کے سامنے تقریر کے طور پر پیش کرے گا۔‏

   5.‏ مسیحیوں کے طور پر زندگی:‏ گیت کے بعد ایک یا دو حصوں پر مشتمل 15 منٹ کا اگلا حصہ سامعین کو خدا کے کلام کا اِطلاق کرنے میں مدد دینے کے لیے ترتیب دیا گیا ہے۔‏ جب تک ظاہر نہ کِیا گیا ہو،‏ یہ حصے بزرگوں یا لائق خادموں کو تفویض کیے جا سکتے ہیں۔‏ لیکن مقامی ضروریات والے حصے صرف بزرگوں ہی کو پیش کرنے چاہئیں۔‏

  • بائبل کا کلیسیائی مطالعہ:‏ 30 منٹ۔‏ یہ حصہ کسی لائق بزرگ کو تفویض کِیا جانا چاہیے۔‏ (‏جن کلیسیاؤں میں بزرگوں کی تعداد کم ہو تو ضرورت کے مطابق بائبل کا کلیسیائی مطالعہ کرانے کے لیے لائق خادموں کو اِستعمال کِیا جا سکتا ہے۔‏)‏ بزرگوں کی جماعت کو یہ تعیّن کرنا چاہیے کہ کون بائبل کا کلیسیائی مطالعہ کرانے کے لائق ہے۔‏ بائبل کا کلیسیائی مطالعہ کرانے کی منظوری حاصل کرنے والے بھائیوں کو مطالعے کو وقت پر ختم کرنے،‏ کلیدی نکات پر زور دینے اور پیش کیے جانے والے نکات کی عملی قدروقیمت کو سمجھنے میں سب کی مدد کرنے کی خاطر ایک معنی‌خیز طریقے سے مطالعہ کرانے کے قابل ہونا چاہیے۔‏ اُنہیں ‏”‏مینارِنگہبانی“‏ کا مطالعہ کرانے کے طریقے کے سلسلے میں شائع ہونے والی ہدایات کا جائزہ لینے سے فائدہ‌مند اصول مل جائیں گے۔‏ جہاں ممکن ہو،‏ ہر ہفتے مطالعہ کرانے اور پڑھائی کرنے کے لیے مختلف بھائیوں کو اِستعمال کرنا چاہیے۔‏ اگر مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا چیئرمین اِجلاس کے وقت کو کم کرنے کی ہدایت کرتا ہے تو مطالعہ کرانے والے بھائی کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ مطالعے کو کیسے مختصر کِیا جائے۔‏ وہ بعض پیراگراف نہ پڑھنے کا فیصلہ کر سکتا ہے۔‏

  6.‏ اِختتامی کلمات:‏ 3 منٹ یا اِس سے کم۔‏ مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا چیئرمین ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے لیے جوابی پرچہ“‏ سے سوال اور جواب سمیت اِجلاس سے خاص طور پر مفید نکات کی دُہرائی کرے گا۔‏ وہ اگلے ہفتے پیش کیے جانے والے مواد پر ایک نظر ڈالے گا،‏ وہ شاید کسی سوال کی بابت بتا سکتا ہے جس کا جواب دیا جائے گا۔‏ اگر وقت ہو تو وہ اگلے ہفتے کے اِجلاس پر حصے پیش کرنے والے طالبِ‌علموں کے ناموں کا اِعلان کر سکتا ہے۔‏ اگر کوئی خاص ہدایت نہ دی گئی ہو تو چیئرمین کو اپنے اِختتامی کلمات کے دوران کلیسیا کے سامنے کوئی ضروری اِعلان اور خط وغیرہ بھی پڑھنے چاہئیں۔‏ میدانی خدمت کے اِنتظامات اور صفائی کے شیڈول جیسی معمول کی معلومات کا پلیٹ‌فارم سے اِعلان نہیں کرنا چاہیے بلکہ نوٹس بورڈ پر لگا دینا چاہیے۔‏ اگر اِختتامی کلمات کے لیے مختص وقت میں کوئی اِعلان نہیں کیے جا سکتے یا خط نہیں پڑھے جا سکتے تو چیئرمین کو مسیحیوں کے طور پر زندگی والے سیکشن میں حصے پیش کرنے والے بھائیوں سے اپنے حصوں کو مختصر کرنے کی درخواست کرنی چاہیے۔‏ (‏ پیراگراف 5 اور  9 کو دیکھیں۔‏)‏ اِجلاس گیت اور دُعا کے ساتھ ختم ہوگا۔‏

 7.‏ تعلیم دینے اور تلاوت کرنے میں لگے رہیں‏:‏ جنوری 7،‏ 2019ء کے ہفتے سے شروع کر کے مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے چیئرمین کو شاباش دینے اور مشورہ دینے کے لیے بنیاد کے طور پر ‏”‏تعلیم اور تلاوت“‏ بروشر اِستعمال کرنا چاہیے۔‏ ہر طالبِ‌علم کو مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے قاعدے میں حصے کے سامنے قوسین میں کام کرنے کے لیے ظاہر ہونے والے مطالعے کے نکتے پر کام کرنا چاہیے۔‏ ہر مہینے کے پہلے کے دوران مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا چیئرمین ‏”‏تعلیم اور تلاوت“‏ بروشر سے مطالعے کے ایک نکتے پر سامعین کے ساتھ بات‌چیت کرے گا۔‏ ‏”‏تعلیم اور تلاوت“‏ بروشر کا سیکشن ”‏آپ کہاں تک بہتری لا چُکے ہیں؟‏‏“‏ طالبِ‌علم کے اِستعمال کے لیے ترتیب دیا گیا ہے اور اِس پر چیئرمین کو کچھ نہیں لکھنا چاہیے۔‏

  8.‏ مشورہ:‏ مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے چیئرمین کے پاس ہر طالبِ‌علم کے حصوں کے بعد شاباش دینے اور مشورہ دینے کے لیے ‏”‏تعلیم اور تلاوت‏“‏ بروشر پر مبنی مشورہ دینے کے لیے تقریباً ایک منٹ ہوتا ہے۔‏ جب چیئرمین طالبِ‌علم کے حصے کو متعارف کراتا ہے تو وہ مطالعے کے نکتے کا ذکر نہیں کرے گا۔‏ تاہم جب طالبِ‌علم کا حصہ ختم ہو جاتا ہے تو کچھ موزوں تعریفی کلمات کے بعد چیئرمین مطالعے کے نکتے کا اِعلان کر سکتا ہے اور بتا سکتا ہے کہ طالبِ‌علم اُس نکتے پر کیوں اچھی طرح کام کرنے کے قابل ہوا ہے یا پھر نرمی کے ساتھ واضح کر سکتا ہے کہ طالبِ‌علم کے لیے اُس خاص نکتے پر مزید توجہ کیوں دینی چاہیے۔‏ اگر چیئرمین محسوس کرتا ہے کہ اِس سے طالبِ‌علم یا سامعین کو فائدہ ہوگا تو منظر کے دوسرے پہلوؤں پر بھی تبصرہ کر سکتا ہے۔‏ ہر طالبِ‌علم کی ضرورت کے مطابق تفویض‌کردہ مطالعے کے اُسی نکتے یا مطالعے کے کسی اَور نکتے پر ‏”‏تعلیم اور تلاوت“‏ بروشر یا ‏”‏منسٹری سکول“‏ بک پر مبنی اِجلاس کے بعد یا کسی اَور وقت پر علیٰحدگی میں مزید تعمیری مشورہ دیا جا سکتا ہے۔‏—‏مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے نگہبان اور اِمدادی مشیر کی ذمےداری کے بارے میں مزید معلومات کے لیے  پیراگراف 13 اور  16 کو دیکھیں۔‏

    9.‏ وقت:‏ کسی بھی حصے اور مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے چیئرمین کے تبصروں کو زیادہ وقت نہیں لینا چاہیے۔‏ جب وقت پورا ہو جاتا ہے تو طالبِ‌علموں کے حصوں کو موقع‌شناسی کے ساتھ روک دینا چاہئے۔‏ اگر اِجلاس کے دوسرے حصے پیش کرنے والے بھائی زیادہ وقت لیتے ہیں تو اِمدادی مشیر کو اُنہیں علیٰحدہ مشورہ دینا چاہیے۔‏ گیت اور دُعائیں سمیت پورا اِجلاس 1 گھنٹے اور 45 منٹ کا ہونا چاہیے۔‏

  10.‏ حلقے کے نگہبان کا دورہ:‏ جب حلقے کا نگہبان کلیسیا کا دورہ کرتا ہے تو پروگرام کو درج ذیل اِستثنا کے علاوہ ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت—‏اِجلاس کا قاعدہ“‏ کی ہدایات کے مطابق پیش کرنا چاہیے:‏ مسیحیوں کے طور پر زندگی کے حصے میں بائبل کے کلیسیائی مطالعے کی جگہ حلقے کا نگہبان 30 منٹ کی خدمتی تقریر پیش کرے گا۔‏ خدمتی تقریر سے پہلے مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا چیئرمین پیش کیے گئے پروگرام کی دُہرائی کرے گا اور اگلے ہفتے کے اِجلاس پر پیش کیے جانے والے مواد پر ایک نظر ڈالے گا اور کوئی ضروری اِعلان اور خطوط وغیرہ پڑھنے کے بعد حلقے کے نگہبان کو متعارف کرائے گا۔‏ خدمتی تقریر کے بعد حلقے کا نگہبان اپنی پسند کے گیت کے ساتھ اِجلاس کا اِختتام کرے گا۔‏ حلقے کے نگہبان کے دورے کے دوران کلیسیا کی زبان میں اِضافی جماعتوں کا اِنعقاد نہیں کرنا چاہیے۔‏ مگر کسی دوسری زبان کا گروپ اپنے اِجلاس منعقد کر سکتا ہے،‏ خواہ اُس دوران حلقے کا نگہبان میزبان کلیسیا کا دورہ کر رہا ہو۔‏ لیکن گروپ کو حلقے کے نگہبان کی خدمتی تقریر کے لیے میزبان کلیسیا کے ساتھ شامل ہو جانا چاہیے۔‏

 11.‏ حلقے کے اِجتماع یا علاقائی اِجتماع والا ہفتہ:‏ حلقے کے اِجتماع یا علاقائی اِجتماع کے ہفتے کے دوران کوئی بھی کلیسیائی اِجلاس منعقد نہیں کیے جاتے۔‏ ایسے ہفتوں کے دوران اِجلاسوں کے لیے ترتیب دیے گئے مواد پر ذاتی طور پر یا خاندانی طور پر سوچ بچار کرنی چاہیے۔‏

 12.‏ مسیح کی موت کی یادگاری تقریب والا ہفتہ:‏ جب مسیح کی موت کی یادگاری ہفتے کے دوران کسی دن پر آتی ہے تو مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا کوئی بندوبست نہیں کرنا چاہیے۔‏ بِلاشُبہ،‏ یادگاری کے دن میدانی خدمت کے لیے اِجلاس منعقد کرنے چاہئیں۔‏

  13.‏ مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا نگہبان:‏ ایک بزرگ مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے نگہبان کے طور پر خدمت انجام دے گا جس کا اِنتخاب بزرگوں کی جماعت کرے گی۔‏ وہ اِس بات کو یقینی بنانے کا ذمےدار ہوگا کہ اِجلاس منظم طریقے اور اِن ہدایات کے مطابق منعقد کِیا جائے۔‏ اُسے اِمدادی مشیر کے ساتھ اچھا رابطہ رکھنا چاہیے۔‏ جونہی کسی مہینے کے لیے ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت—‏اِجلاس کا قاعدہ“‏ مل جاتا ہے تو مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا نگہبان اُس مہینے کے لیے طالبِ‌علموں کو حصے تفویض کر دے گا۔‏ (‏ پیراگراف 4 کو دیکھیں۔‏)‏ ہر طالبِ‌علم کے حصے اور جس نکتے پر طالبِ‌علم کو کام کرنا ہو گا اُس کی بابت معلومات ہماری ‏”‏مسیحی زندگی اور خدمت—‏اِجلاس میں آپ کا حصہ“‏ ‏(‏ایس-‏89)‏ کے فارم کے ذریعے حصہ پیش کرنے کے دن سے کم از کم تین ہفتے پہلے دے دینے چاہئیں۔‏

 14.‏ مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کا چیئرمین:‏ ہر ہفتے ایک بزرگ مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے دوران چیئرمین کے طور پر خدمت انجام دے گا۔‏ (‏جن کلیسیاؤں میں بزرگوں کی تعداد کم ہو تو ضرورت کے مطابق لائق خادموں کو اِستعمال کِیا جا سکتا ہے۔‏)‏ وہ اِجلاس کے لیے اِبتدائی اور اِختتامی کلمات تیار کرنے اور بات چیت کے لیے تجاویز کی ویڈیو پر بات‌چیت کرنے کے علاوہ ‏”‏تعلیم اور تلاوت‏“‏ بروشر سے مطالعے کے ایک نئے نکتے کو متعارف کرانے والی ویڈیوز پر بات‌چیت کرنے کا ذمےدار ہوگا۔‏ وہ اِجلاس کے تمام حصوں کو بھی متعارف کرائے گا اور بزرگوں کی تعداد کے حساب سے اِجلاس کے دوسرے حصے بھی پیش کرنے کی ذمےداری اُٹھا سکتا ہے۔‏ حصوں کو متعارف کرانے کے لیے تبصروں کو بہت ہی مختصر ہونا چاہیے۔‏ بزرگوں کی جماعت یہ فیصلہ کرے گی کہ کون سے بزرگ یہ ذمےداری اُٹھانے کے لائق ہیں۔‏ عام طور پر لائق بزرگوں کو باری باری اِجلاس کے چیئرمین کی ذمےداری دی جائے گی۔‏ مقامی حالات کے پیشِ‌نظر دوسرے لائق بزرگوں کی نسبت مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے نگہبان کو زیادہ مرتبہ چیئرمین کے طور پر اِستعمال کِیا جا سکتا ہے۔‏ اگر ایک بزرگ بائبل کا کلیسیائی مطالعہ کرانے کے لائق ہے تو غالباً وہ اِجلاس کے چیئرمین کے طور پر خدمت انجام دینے کے بھی لائق ٹھہرے گا۔‏ تاہم یہ بات مہربانی سے ضرور ذہن میں رکھیں کہ چیئرمین کے طور پر خدمت انجام دینے والے بزرگ سے یہ تقاضا کِیا جاتا ہے کہ وہ طالبِ‌علموں کے طور پر حصے پیش کرنے والوں کی محبت‌آمیز اور فائدہ‌مند تعریف کرنے کے ساتھ ساتھ مشورہ بھی دیں۔‏ چیئرمین اِس بات کے لیے بھی ذمےدار ہوگا کہ اِجلاس وقت پر ختم ہو۔‏ (‏ پیراگراف 6 اور  9 کو دیکھیں۔‏)‏ اگر چیئرمین چاہے اور جگہ بھی کافی ہو تو پلیٹ فارم پر اسٹینڈ والا مائیکروفون رکھ سکتے ہیں تاکہ وہ ایک حصہ ختم ہونے کے فوراً بعد اگلے حصے کو متعارف کرا سکے اور اُسی دوران اُس حصے کو پیش کرنے والا بھائی سپیکر اسٹینڈ پر پہنچ جائے۔‏ اِسی طرح اگر چیئرمین چاہے تو وہ طالبِ‌علم کی تلاوت والے حصے اور شاگرد بنانے کی تربیت والے حصے کے دوران پلیٹ فارم پر میز کے پاس رکھی گئی کُرسی پر بیٹھ سکتا ہے۔‏ اِس طریقے سے وقت بچ سکتا ہے۔‏

 15.‏ بزرگوں کی جماعت کا منتظم:‏ بزرگوں کی جماعت کا منتظم طالبِ‌علموں کے حصوں کے علاوہ اِجلاس کے تمام حصے تفویض کرے گا۔‏ اِس میں ہر ہفتے کے لیے اِجلاس کے چیئرمین کے طور پر خدمت انجام دینے کے لیے اُن بزرگوں کو ذمےداری دینا بھی شامل ہے جنہیں بزرگوں کی جماعت نے اِجلاس کے چیئرمین کے طور پر خدمت انجام دینے کی اِجازت دی ہے۔‏ مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس کے نگہبان کے تعاون سے بزرگوں کی جماعت کے منتظم کو اِس بات کا یقین کر لینا چاہیے کہ پورے اِجلاس کے حصوں کے شیڈول کی کاپی نوٹس بورڈ پر لگا دی جائے۔‏

   16.‏ اِمدادی مشیر:‏ جب بھی ممکن ہو تو اِس ذمےداری کو پورا کرنے کے لیے ایک ایسے بزرگ کو اِستعمال کرنا اچھا ہوگا جو ایک تجربہ‌کار مقرر ہے۔‏ اگر ضرورت پڑتی ہے تو اِمدادی مشیر کی ذمےداری ہوگی کہ وہ بزرگوں اور خادموں کو اُن کے تقریری حصوں کے سلسلے میں علیٰحدگی میں مشورہ دے،‏ اِس میں مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس میں حصے پیش کرنے،‏ عوامی خطاب پیش کرنے اور ‏”‏مینارِنگہبانی“‏ یا بائبل کا کلیسیائی مطالعہ کرانے یا اُن کی پڑھائی کرنے والے شامل ہیں۔‏ (‏ پیراگراف 9 کو دیکھیں۔‏)‏ اگر کلیسیا میں کئی بزرگ ہیں جو لائق مقرر اور اُستاد ہیں تو ہر سال ایک مختلف بزرگ اِمدادی مشیر کے طور پر خدمت انجام دے سکتا ہے۔‏ یہ ضروری نہیں ہے کہ اِمدادی مشیر ہر حصے کے بعد مشورہ دے۔‏

 17.‏ اِضافی جماعتیں:‏ طالبِ‌علموں کی تعداد کے پیشِ‌نظر کلیسیائیں طالبِ‌علموں کے حصوں کے لیے اِضافی جماعتوں کا بندوبست کر سکتی ہیں۔‏ ہر اِضافی جماعت کے لیے ایک لائق مشیر ہونا چاہیے،‏ جسے ترجیحاً بزرگ ہونا چاہیے۔‏ اگر ضروری ہو تو ایک لائق خدمت‌گزار خادم کو بھی یہ ذمےداری دی جا سکتی ہے۔‏ بزرگوں کی جماعت اِس بات کا فیصلہ کرے گی کہ کون اِس حیثیت میں کام کر سکتا ہے اور کیا اِس ذمےداری کو باری باری پورا کرنا چاہیے یا نہیں۔‏ مشیر کو  پیراگراف 8 میں بتائے گئے طریقے پر عمل کرنا چاہیے۔‏ اگر اِضافی جماعتیں منعقد کی جاتی ہیں تو پاک کلام سے سنہری باتوں کے حصے میں سنہری باتوں کی تلاش والے حصے کے بعد طالبِ‌علموں کو دوسرے کلاس رومز میں بھیجا جا سکتا ہے۔‏ اُنہیں شاگرد بنانے کی تربیت والے حصے کے لیے پھر سے کلیسیا کے ساتھ شامل ہو جانا چاہئے۔‏ جب کسی ویڈیو بات‌چیت کی جاتی ہے تو اگر ممکن ہو تو اِضافی جماعتوں میں موجود بہن بھائیوں کو دوسرے کمروں سے دیکھنا اور سننا چاہیے۔‏ بصورتِ‌دیگر،‏ مشیر کو موبائل ڈیوائس کی مدد سے ویڈیو دِکھانی اور بات‌چیت کرنی چاہیے۔‏

 18.‏ ویڈیوز:‏ اِس اِجلاس کے سلسلے میں مخصوص ویڈیوز اِستعمال کی جائیں گی۔‏ ہفتے کے دوران اِجلاس کے لیے ویڈیوزJW Library app کے ذریعے دستیاب ہوں گی جو مختلف ڈیوائسز پر اِستعمال ہو سکتی ہیں۔‏ کبھی کبھار بات چیت کے لیے تجاویز کی ویڈیوز مسیحی زندگی اور خدمت والے اِجلاس پر دِکھانے کے بعد میدانی خدمت کے اِجلاسوں پر چلائی جا سکتی ہیں۔‏