مواد فوراً دِکھائیں

مضامین کی فہرست فوراً دِکھائیں

 مسیحیوں کے طور پر زندگی

‏”‏جسے خدا نے جوڑا ہے .‏ .‏ .‏ “‏

‏”‏جسے خدا نے جوڑا ہے .‏ .‏ .‏ “‏

شریعت میں کہا گیا تھا کہ اگر ایک آدمی اپنی بیوی کو طلاق دینے کے بارے میں سوچ رہا ہے تو اُسے ایک قانونی دستاویز تیار کرانی چاہیے۔‏ اِس حکم کا مقصد یہ تھا کہ شوہر اپنی بیوی کو جلدبازی میں طلاق نہ دے۔‏ لیکن یسوع مسیح کے زمانے میں مذہبی پیشواؤں نے طلاق لینے کو بہت آسان بنا دیا تھا۔‏ شوہر اپنی بیوی کو کسی بھی وجہ سے طلاق دے سکتے تھے۔‏ (‏‏”‏ترجمہ نئی دُنیا“‏ کے آن‌لائن مطالعے کے ایڈیشن میں مرقس 10:‏4 پر اضافی معلومات میں ”‎certificate of dismissal,‎“ مرقس 10:‏11 پر اِضافی معلومات میں ”‎divorces his wife,‎” “‎commits adultery against her‎“)‏ یسوع مسیح نے اِس حقیقت پر توجہ دِلائی کہ شادی کے بندوبست کا آغاز خود یہوواہ خدا نے کِیا تھا۔‏ (‏مر 10:‏2-‏12‏)‏ یہوواہ چاہتا تھا کہ شوہر اور بیوی عمر بھر کے لیے ”‏ایک بن جائیں۔‏“‏ یہی بیان متی کی اِنجیل میں بھی درج ہے۔‏ متی کی اِنجیل سے پتہ چلتا ہے کہ طلاق صرف ”‏حرام‌کاری“‏ کی بِنا پر دی جا سکتی ہے۔‏—‏متی 19:‏9‏۔‏

آج بہت سے لوگ شادی کے حوالے سے یسوع جیسی سوچ رکھنے کی بجائے فریسیوں جیسی سوچ رکھتے ہیں۔‏ جب اُن کی شادی‌شُدہ زندگی میں مسئلے پیدا ہوتے ہیں تو وہ فوراً طلاق لے لیتے ہیں۔‏ اِس کے برعکس مسیحی جوڑے شادی کے عہدوپیمان کو سنجیدہ خیال کرتے ہیں اور بائبل کے اصولوں پر عمل کر کے اپنے مسئلوں کو حل کرنے کی ہر ممکن کوشش کرتے ہیں۔‏ ویڈیو ‏”‏محبت اور احترام گھرانے کو متحد کرتے ہیں‏“‏ کو دیکھنے کے بعد اِن سوالوں کے جواب دیں:‏

  • آپ اپنی شادی‌شُدہ زندگی میں امثال 15:‏1 پر کیسے عمل کر سکتے ہیں اور ایسا کرنا اہم کیوں ہے؟‏

  • آپ امثال 19:‏11 پر عمل کر کے مسائل سے کیسے بچ سکتے ہیں؟‏

  • اگر آپ کی شادی ٹوٹنے کے خطرے میں ہے تو طلاق کے بارے میں سوچنے کی بجائے آپ کو کن سوالوں پر غور کرنا چاہیے؟‏

  • آپ متی 7:‏12 پر عمل کرنے سے اچھے شوہر یا اچھی بیوی کیسے بن سکتے ہیں؟‏